دل سے جو بات نکلتی ہے اثر رکھتی ہے

دل سے جو بات نکلتی ہے اثر رکھتی ہے
پر نہیں’ طاقت پرواز مگر رکھتی ہے

دل سے جو بات نکلتی ہے اثر رکھتی ہے
پر نہیں’ طاقت پرواز مگر رکھتی ہے

Dil se jo bat nikalti ha asar rakhti ha,
Per nahi, Taqt-e-perwaz magar rakhti ha.

قدسی الاصل ہے’ رفعت پہ نظر رکھتی ہے
خاک سے اٹھتی ہے ، گردوں پہ گزر رکھتی ہے

Qudsi alhasil hai, rifat pe nazar rakhti hai,
Kahak se uthti hai, gardon pe guzar rakhti hai.

For more update about all types of poetry visit: urdupoetryy.com

Leave a Comment